Home » Breaking » الیکشن کمیشن 31دسمبر تک انتخابی فہرستیں مکمل کرے، چیف جسٹس

الیکشن کمیشن 31دسمبر تک انتخابی فہرستیں مکمل کرے، چیف جسٹس

اسلام آباد:سپریم کورٹ نے الیکشن کمیشن کو حکم دیا ہے کہ انتخابی فہرستیں ہر صورت میں یکم دسمبر تک تیار کر دی جائیں چاہے پچیس ہزار لو گ لگانے پڑیں۔ سپریم کورٹ میں انتخابی فہرستوں کے مقدمے کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ بوگس فہرستوں پر الیکشن ہوئے تو پھر خون خرابے اور جھگڑے ہونگے۔ انتخابی فہرستوں سے بوگس ووٹ کے اخراج سے متعلق بینظیر بھٹو اور عمران خان کی پٹیشنز کی سماعت تین رکنی بینچ کر رہا ہے جس کی سربراہی چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کر رہے ہیں۔ اس سے قبل سپریم کورٹ کاالیکشن کمیشن کی رپورٹ پر عدم اطمینان کا اظہار کیا۔ الیکشن کمیشن اور نادرا نے نئی ووٹرلسٹوں کی تیاری عمل پر رپورٹ پیش کردی جس میں موٴقف اختیار کیا گیا کہ سندھ میں سیلاب کی وجہ سے مصدقہ انتخابی فہرستوں کی تیاری میں تاخیر ہوئی۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ سندھ کے تو صرف 6 اضلاع میں سیلاب آیا، انتخابی فہرستوں کی تیاری میں ایک ایک سیکنڈ کی اہمیت ہوتی ہے، یہ معاملہ قومی مفاد کاہے۔ چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں مزید کہا کہ گزشتہ الیکشن سے قبل بینظیر کی درخواست آئی تھی، بینظیر بھٹو کی درخواست کے مقدمے میں کمیشن کو 1ماہ کاوقت دیاگیا تھا۔ ایک موقع پر جسٹس طارق پرویز نے سوال کیا کہ فرض کریں 15 مارچ کو حکومت الیکشن کراتی ہے تو پرانی ووٹر لسٹوں میں تو 44 فیصد بوگس ووٹ ہیں، کیاآیندہ ایسی حکومت بنے گی جو44 فیصد بوگس ووٹ سے آئی ہو؟ کیا ان ہی بوگس ووٹر لسٹوں پر الیکشن ہونگے؟ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہدنیا میں ہر 4 سال بعد انتخابات کا عمل شروع ہوجاتا ہے، انتخابی فہرستوں کی تیاری میں جان بوجھ کر تاخیر کی گئی، بلوچستان کے بعض مقاما ت پر امن و امان کا مسئلہ ہے لیکن کیا امن و امان کی جہ سے تمام کام رک جاتے ہیں، بلوچستان میں عدالتیں کام کررہی ہیں۔ چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں مزید کہا کہ سوات سے جاکر آیا ہوں، ان دنوں تو وہ انتہائی پرامن جگہ ہے ، ہمیں سیکریٹری الیکشن کمیشن کیخلاف کارروائی کرنا پڑیگی، لکھیں گے کہ الیکشن کمیشن ذمے داری انجام دینے میں ناکام ہوگیا۔ سیکریٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ خیبرپختونخوا ،سندھ نے فہرستوں کی تیاری موخر کرنیکی قراردادیں بھیجیں جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ وہ قراردادیں سامنے لائیں، سندھ نے تو ایسی کوئی قرار داد نہیں دی، سندھ میں پی پی حکومت ہے، علم ہے وفاق ایسی تاخیر کا نہیں کہے گا، جمہوری حکومت کیسے لسٹوں کی تیاری کاعمل روک سکتی ہے۔ اس پر سیکریٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ انشاء اللہ جلد انتخابی لسٹیں تیار کرلی جائینگی۔