Home » News » قذاقوں کی قید سے عملے کی رہائی جلد ہوگی، احمد چنائے

قذاقوں کی قید سے عملے کی رہائی جلد ہوگی، احمد چنائے

  • Publish on March 29, 2012 in News
  • |
  • by admin

صومالی بحری قزاقوں کے ہاتھوں چھبیس نومبر دو ہزار دس کو اغوا ءہونے والے بحری جہاز کے سات پاکستانیوں سمیت تئیس رکنی عملے کی رہائی کے لیے دبئی جانے والے سی پی ایل سی چیف احمد چنائے کا کہنا ہے کہ قزاقوں سے معاملات طے پا گئے ہیں ۔ بیس اپریل سے فنڈ جمع کرنے کی مہم شروع کی جائے گی۔ایم وی البیڈو کی رہائی کے لیے صومالی قزاقوں سے بات چیت کے لیے سی پی ایل سی چیف احمد چنائے دبئی میں موجود ہیں ۔ اے آروائی سے گفتگو میں احمد چنائے کا کہنا تھا کہ قزاقوں سے رقم کے معاملات طے پا گئے ہیں، قزاقوں کو تاوان نہیں بلکہ سولہ ماہ تک مغویوں پر آنے والے اخراجات کی مد میں دو کرڑور پچیاسی لاکھ ڈالر کی رقم ادا کی جائے گی جبکہ رقم جمع کرنے کے حوالے سے بیس اپریل سے فنڈ جمع کرنے کی مہم بھی شروع کریں گے۔ بحری جہاز ایم وی البیڈو کو صومالی قزاقوں کی قید میں سولہ ماہ بیت گئے ہیں،جہاز چھبیس نومبردو ہزاردس کو دبئی کی بندرگاہ جبل علی سے کینیا کی پورٹ ممباسا روانہ ہوا تھا۔ جسے صومالی قزاقوں نے اغواء کرکے دس لاکھ ڈالرتاوان طلب کیا تھا۔ جہاز پر عملے کے تئیس ارکان میں سات پاکستانیوں کے علاوہ سری لنکا ،بنگلہ دیش ،بھارت اورایران کے باشندے شامل ہیں ۔جہاز کا مالک ایرانی نژاد ملائیشئین باشندہ ہے۔ جہاز پرسات پاکستانیوں میں کپتان جاوید سلیم، مانسہرہ سے تعلق رکھنے والے چیف آفیسر مجتبی، فیصل آباد کے تھرڈ آفیسرراحیل انور،گجرات کے فورڈ انجینئیر ذوالفقار علی،جہلم کے سی مین احسن نوید اورفقیر محمد اور دیر سے تعلق رکھنے والے کاشف السلام شامل ہیں ۔ سولہ ماہ سے یر غمالیوں کے اہل خانہ حسرت و یاس کی تصویر بننے ہوئے ہیں اور اپنے پیاروں کی تصاویر دیکھ کر غمزدہ ہوجاتے ہیں۔