Home » News » پيپلزپارٹي کا مسلم ليگ ن کے جواب ميں جلسے کرنے کا فيصلہ

پيپلزپارٹي کا مسلم ليگ ن کے جواب ميں جلسے کرنے کا فيصلہ

اسلام آباد : صدر آصف علي زرداري کي زير صدرت اجلاس ميں اتفاق کيا گيا کہ طاقت کے زور پر کسي کو آئين کي تشريح نہيں کرنے دي جائے گي جب کہ مسلم ليگ ن کے جواب ميں جلسے کرنے کا بھي فيصلہ کيا گيا ہے، پيپلزپارٹي کا پہلا جلسہ پنجاب اور سندھ کے سرحدي شہر اوباڑو ميں 12 مئي کو ہو گا. صدر زرداري کي زير صدارت ايوان صدر اسلام آباد ميں پيپلز پارٹي سندھ کے رہنماو?ں کا اجلاس ہوا جس ميں وفاقي و زير سيد خورشيد شاہ، وزير اعلي? سندھ سيد قائم علي شاہ، آغا سراج دراني، مراد علي شاہ، جام مہتاب، نواب علي وسان، گل محمد اور نذير بگھيو نے شرکت کي. ذرائع کے مطابق اجلاس ميں فيصلہ کيا گيا کہ مسلم ليگ ن کو کھل کھيلنے کا موقع کسي طور نہيں ديا جائے گا، پيپلز پارٹي سندھ اور پنجاب کے مختلف شہروں ميں جلسے کرے گي، آئندہ انتخابات ميں بھي اتحاديوں کو ساتھ لے کر چلے گي اور عوامي امنگوں کے مطابق سرائيکي صوبہ بنا کر دم لے گي. اجلاس ميں اتفاق کيا گيا کہ پيپلز پارٹي عوامي عدالت کے فيصلوں کو تسليم کرتي ہے. ذارئع کے مطابق اجلاس ميں لياري ميں شر پسند عناصر کے خلاف بلا امتياز کارروائي جاري رکھنے کا بھي فيصلہ کيا گيا.