Home » Breaking » امریکہ کو پاکستان کی خود مختاری کا احترام کرنا ہو گا، وزیر اعظم

امریکہ کو پاکستان کی خود مختاری کا احترام کرنا ہو گا، وزیر اعظم

اسلام آباد (بیورورپورٹ)وفاقی کابینہ نے افغانستان کیلئے سپلائی لائنز دوبارہ کھولنے کیلئے کابینہ کی دفاعی کمیٹی کے فیصلے کی توثیق اور دہری شہریت رکھنے والے اوورسیز پاکستانیوں کو پارلیمنٹ کا رکن بننے کیلئے انتخابات میں حصہ لینے کیلئے آئین کے آرٹیکل 61(3)(C) میں ترمیم کیلئے مسودہ بل کی منظوری دیدی ہے جبکہ وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ امریکہ کو پاکستان کی خود مختاری کا احترام کرنا ہو گا، افغانستان، خطہ اور ساری دنیا میں امن و استحکام کے وسیع تر مفاد اور نیٹو، ایساف کے 50 رکن ممالک کے ساتھ باہمی تعلقات کیلئے ہم انہیں درپیش چیلنجوں سے نمٹنے کیلئے افغانستان کے قومی اداروں کی مدد کیلئے عبوری عمل میں سہولت دیں گے۔ وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں کابینہ نے افغانستان کیلئے سپلائی لائنز دوبارہ کھولنے کیلئے کابینہ کی دفاعی کمیٹی کے فیصلے کی توثیق کردی ۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ امریکہ کو پاکستان کی خود مختاری کا احترام کرنا ہو گا تاکہ باہمی تعلقات کو مزید فروغ دیا جا سکے جو پائیدار اور سٹریٹجک اہمیت کے حامل ہیں اور خطہ میں امن و سلامتی کیلئے ضروری ہیں۔ سیکرٹری پانی و بجلی ڈویژن نے کابینہ کو ملک میں توانائی کی مجموعی صورتحال کے بارے میں آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ دس دنوں سے ملک میں ہائیڈل، تھرمل اور آئی پی پیز ذرائع سے اوسطاً 12500 میگاواٹ بجلی پیدا ہو رہی ہے، پانچ ہزار پلس میگاواٹ کا شارٹ فال ہے، تیل و گیس کی سپلائی میں اضافہ اور گلیشیئرز کے پگھلنے سے بجلی کی یومیہ پیداوار جلد ہی بڑھ کر 13500 میگاواٹ ہو جائے گی۔ کابینہ کو بتایا گیا کہ ملک میں بجلی کی صورتحال کے قریبی جائزہ کیلئے انرجی کمیٹی کا اجلاس باقاعدگی سے ہو گا۔ کابینہ نے دوہری شہریت رکھنے والے اوورسیز پاکستانیوں کو پارلیمنٹ کا رکن بننے کیلئے انتخابات میں حصہ لینے کیلئے آئین کے آرٹیکل 61(3)(C) میں ترمیم کیلئے مسودہ بل کی بھی منظوری دی جسے وزارت سمندر پار پاکستانیز نے پیش کیا تھا۔ کابینہ نے پارلیمنٹ کے کسی بھی ایوان میں توہین عدالت سے متعلق بل 2012 متعارف کرانے کی بھی منظوری دی، متعلقہ بل کے تحت اپیل کے حق کو وسعت دی گئی ہے۔ علاوہ ازیں توہین عدالت سے متعلق کارروائیوں کی متعلقہ ضروری شقوں کو بھی شامل کیا گیا ہے۔ اجلاس میں کامرس ڈویژن میں زیر التواء کابینہ کے فیصلوں پر عملدرآمد کی صورتحال کا بھی جائزہ لیا۔ اب تک وزارت نے 61 فیصلہ کئے ہیں اور 44 پر عملدرآمد ہوا جبکہ 17 عملدرآمد کے مرحلے میں ہیں، عملدرآمد کی مجموعی شرح 72 فیصد ہے۔ کابینہ کے اجلاس میں سرمایہ کاری بورڈ اور اردن کے انوسٹمنٹ بورڈ کے درمیان مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کی بھی منظوری دی گئی جس کے تحت دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی اور سرمایہ کاری کے امور پر مفاہمت میں اضافہ کیا جائے گا۔