Home » Gujranwala » توہین عدالت قانون کو کالعدم قرار دینا خوش آئند فیصلہ ہے،فرقان عزیز بٹ

توہین عدالت قانون کو کالعدم قرار دینا خوش آئند فیصلہ ہے،فرقان عزیز بٹ

گوجرانوالہ ( سٹاف رپورٹر) صدرنیشنل لیبر فیڈریشن ضلع گوجرانوالہ محمد فرقان عزیز بٹ نے توہین عدالت قانون کو کالعدم قرار دینے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ صدر اوروزیر اعظم کو توہین عدالت قانون سے مستثنیٰ قرار دینا غیر آئینی ہے۔نیا قانون عدالتی اختیارات کم کرنے کے مترادف ہے۔حکومت نے چند لوگوں کے لئے قانون بنایا تھا۔سپریم کورٹ کی جانب سے کالعدم قرار دیا جانا خوش آئند فیصلہ ہے۔اداروں کے درمیان تصادم کی فضا پیدا کی جارہی ہے۔18کروڑ عوام پیپلز پارٹی کو سیاسی شہید نہیں بننے دیں گے۔عدلیہ صحیح فیصلے کررہی ہے۔سپریم کورٹ کی آزادی پر کیا جانے والاہر وار انشا ء اللہ ناکام ہوگا۔انہوں نے کہاکہ حکومت اور اس کے اتحادی عدالت کے ساتھ بغاوت کا سلسلہ بند کریں۔اگر آئندہ بھی پارلیمنٹ کوئی متنازعہ قانون سازی کرے گی تو اس کا بھی حشر یہی ہوگا۔پیپلز پارٹی اپنی ناکامیوں پر پردہ ڈالنے کے لئے قوم کو نان ایشوز میں الجھا رہی ہے۔موجودہ حکومت ہر محاذ پر بری طرح ناکام ہوچکی ہے۔حکمرانوں کی کارکردگی قوم کے سامنے ہے۔ پیپلز پارٹی کے ساڑھے چار سالہ دور اقتدار میں وطن عزیز کو کرپشن،ٹیکس چوری اور خراب طرز حکمرانی کی وجہ سے 8.5ٹریلین روپے کا نقصان اٹھاناپڑا۔تین شعبوں میں ہر دن پانچ سو ارب روپے کا خرد برد کیا جارہا ہے۔انہوں نے کہاکہ بیرونی قرضے6700ارب روپے سے بڑھ کر 1200ارب روپے تک پہنچ چکے ہیں۔موجودہ بدترین دور حکومت میں عوام کو صرف مہنگائی کا ہی تحفہ دیا گیا ہے۔ معاشی ترقی کی شرح 7فیصد سے کم ہوکرڈھائی فیصدتک گرچکی ہے۔حکومتی گڈگورننس کے تمام دعوے الفاظ کے گورکھ دھندے تک محیط ہوکر رہ گئے ہیں۔لوڈ شیڈدنگ سے ہر سال 2ارب ڈالر کا نقصان اور4لاکھ مزدور بے روز گار ہورہے ہیں۔