Home » Business » سندھ میں فلار ملزکو سرکاری گندم طلب سے کم فراہم کی جارہی ہے

سندھ میں فلار ملزکو سرکاری گندم طلب سے کم فراہم کی جارہی ہے

کراچی:سندھ میں سرکاری گندم کے اجراء کی قیمت پنجاب سے 50 روپے فی سو کلو زائد ہے ، جبکہ سندھ محکمہ خوراک ملوں کو ان کی ماہانہ طلب سے کم گندم فراہم کر رہا ہے جس سے آٹے کی قیمتوں میں کمی کا امکان نہیں ہے۔ سندھ فلار ملز کے مطابق صوبے میں گندم کی ماہانہ کھپت 2.5 لاکھ ٹن ہے جس کے مقابلے صوبائی محکمہ خوراک ملوں کو صرف 1 لاکھ ٹن کے قریب سرکاری گندم کا اجراء دو ہزار 850 روپے فی 100 کلو کے حساب سے کر رہا ہے اور طلب پوری نہ ہونے کے باعث ملیں اوپن مارکیٹ سے مہنگی گندم خریدنے پر مجبور ہیں جس سے آٹے کی قیمتوں کمی واقع نہیں ہوسکتی۔فلار ملوں نے محکمہ خوارک سے مطالبہ کیا ہے کہ ملوں کے لیے گندم کااجراء مخصوص کوٹے کے بجائے آزادانہ کیا جائے اور سرکاری گندم کی اجراء قیمت پنجاب کی طرح 2800 روپے فی 100 کلو مقرر کی جائے۔ماہرین کے مطابق محکمہ خوراک سندھ کے پاس 12 لاکھ ٹن سے زائد گندم کاذخیرہ موجود ہے لہٰذا اربوں روپوں کی اس گندم کو سڑانے کے بجائے عوام کو ریلیف دینے کے لیے استعمال کیا جائے۔