Home » Gujranwala » انتظامیہ اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے درمیان رابطہ بنیادی اہمیت کا حامل ہے،عبدالجبار

انتظامیہ اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے درمیان رابطہ بنیادی اہمیت کا حامل ہے،عبدالجبار

گوجرانوالہ(ناصر بٹ) کمشنر گوجرانوالہ ڈویژن عبدالجبار شاہین نے کہا ہے کہ انتظامیہ اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے درمیان رابطہ اور اشتراک عمل بنیادی اہمیت کا حامل ہے جس کی بدولت عوامی شکایات کے ازالے اور مثبت تنقید کے ذریعہ بہتر منصوبہ بندی میں بڑی مدد ملتی ہے۔ ذرائع ابلاغ نے محرم الحرام کے دوران اتحاد بین المسلمین اور فرقہ وارانہ ہم آھنگی کے فروغ میں جو کردار ادا کیاہے وہ قابل تحسین ہے۔پولیس اور انتظامیہ کے تمام افسران الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا کے اس تعمیری کردار کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے خصوصی شکر گزار ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے الیکٹرانک میڈیا کے نمائندوں کے اجلاس میں بات چیت کے دوران کیا۔ اجلاس میں تمام نیوز چینلز کے بیوروچیفس اور نمائندگان نے شرکت کی۔اس موقع پر کمشنر نے بتایا کہ وزیراعلی پنجاب کا آئندہ ہفتے 7 دسمبر کو دورہ گوجرانوالہ متوقع ہے جس کے دوران وہ مکمل شدہ تعمیراتی منصوبوں کا افتتاح کریں گے اور نئے منصوبوں کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔ جن منصوبوں کا افتتاح کریں گے ان میں سیالکوٹ روڈ‘ سہولت مرکز‘ سپورٹس کمپلیکس کمشنر آفس اور گورنمنٹ گرلز ہائی سکول فرید ٹاؤن شامل ہیں۔ وزیراعلی پنجاب اپنے دورہ کے دوران کاشتکاروں میں گرین ٹریکٹر اور طلبہ میں لیپ ٹاپ بھی تقسیم کریں گے۔ضمنی انتخابات میں ضابطہ اخلاق کی پابندی کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میںانہوں نے کہا کہ ڈویژن کے جن حلقوں میں ضمنی انتخابات ہو رہے ہیں ان میں انتظامیہ کی طرف سے ضابطہ اخلاق کی پابندی کو یقینی بنایا جارہاہے۔ان علاقوں میں کوئی بھی نیا منصوبہ نہیں شروع کیاگیا اور کوئی مرکزی اور صوبائی وزیر انتخابی مہم میں شامل نہیںہوا۔انہوں نے کہا کہ اس پابندی کی وجہ سے کئی منصوبے فنڈز کے اجراء کے باوجود التوا کا شکار ہیں۔ علاوہ ازیں پولیس کی طرف سے ہر ممکن حد تک اسلحہ کی نمائش کو روکا جارہا ہے اور الیکشن کے روز امن وامان اور پر امن فضا کو یقینی بنایا جائے گا۔جی ٹی روڈ فلائی اوور کے منصوبے کے بارے میں انہوں نے بتایا کہ یہ منصوبہ اپنی نوعیت کا واحد منصوبہ ہے جو جی ٹی روڈ پر بنایا جارہا ہے اور یہ ایک عیاں حقیقت ہے گوجرانوالہ سے پشاور تک جی ٹی روڈ پر واقع کسی بھی شہر میں فلائی اوور کی سہولت موجود نہیں ہے۔ فلائی اوور کی لمبائی 1.72کلو میٹر ہے اوراس فلائی اوور کی بدولت عوام کو موجودہ پانچ لین کی بجائے گیارہ لین میسر آئیں گی جن میں سے چھ لین ان کے نیچے اور پانچ پل کے اوپر ہونگی۔ اس سہولت کی بدولت عوام کو کئی عشروں تک ٹریفک کے بآسانی بہاؤ کی سہولت حاصل رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس فلائی اوور کی بدولت تین ریلوے پھاٹک بھی کور ہو رہے ہیں جن پر گاڑی کے اوقات کے دوران ٹریفک میں رکاوٹ پیدا ہوتی تھی۔ انہوں نے کہا کہ فلائی اوور کے متاثرہ دکانداروں کو معاوضہ ادا کیاگیاہے اور ان کے مالی نقصانات کا انسانی بنیادوں پر خیال رکھا گیاہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ این ایل سی کا ادارہ دن رات کام کرکے مارچ2013 کے آخر میں اس فلائی اوور کو ریکارڈ مدت میں مکمل کرلے گا۔ انہوں نے کہا اگرچہ فلائی اوور کی تعمیرکی وجہ سے عوام کو کچھ مہینوں تک دشواری کا سامنا پڑے گا ‘ پل کی تعمیر کے بعد عوام کو آمدورفت کی جو سہولت میسر آئے گی وہ اس عارضی تکلیف سے کہیں زیادہ سود مند ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ پی ایچ اے گوجرانوالہ کا قیام قانون سازی کے بعد جلد عمل میں لایا جائے گا۔