Home » Gujranwala » در اصل اس نظریاتی بنیاد میں تحریک آزادی کی روح بسی ہے،ایس اے حمید

در اصل اس نظریاتی بنیاد میں تحریک آزادی کی روح بسی ہے،ایس اے حمید

گوجرانوالہ(سٹاف رپورٹر) پاکستان تحریکِ انصاف کی پولیٹیکل اور سٹریجک کمیٹی کے رُکن اوراُمیدوار قومی اسمبلی حلقہ 96 ایس اے حمید نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر پر پاکستان کا اپنا حق دعویٰ بر قرار رکھنا اور وہاں پر بھارت کے خلاف مزاحمت کا مسلسل کسی نہ کسی صورت جاری رہنا ہی پاکستان کی کامیابی اور بھارت کی ناکامی و پسپائی کی دلیل ہے یہی وجہ ہے کہ مقبوضہ کشمیر آج تک بین الاقوامی قوانین کی رو سے متنازعہ علاقوں میں شمار ہوتا ہے اور جب تک پاکستان مقبوضہ کشمیر پر اپنے دعوے پر ڈٹا رہے گا تب تک مقبوضہ کشمیر ہرگز بھارت کا قانونی حصہ نہیں بن سکے گا۔پاکستان تحریک انصاف پبلک سیکرٹیریٹ ٹرسٹ پلازہ میں کشمیری مہاجرین کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ در اصل تحریک آزادی کشمیر کے خلاف انتہائی خطرناک سازش ہو رہی ہے جس کا مقصد تحریک کو اس بنیاد سے محروم کرنا ہے جس پر یہ کھڑی ہے مزاحمتی تحریکوں کی مضبوطی ، سخت جانی اور پائیداری ان کی نظریاتی بنیادوں میں پنہاں ہوتی ہے جس مزاحمتی تحریک کی نظریاتی بنیاد گہری، مضبوط اور شکست نا پذیر ہو اسے وقتی طور پر تو دبایا جا سکتا ہے لیکن ختم ہرگز نہیں کیا جا سکتا آزادی کشمیر کے لئے جاری مزاحمت کی نظریاتی بنیاد جغرافیہ،سیاست ،تاریخ اور مذہب کے اٹل حقائق پر استوار ہے اس نظریاتی بنیاد سے جدوجہد آزادی کو محروم کرنا اسے موت کے گھاٹ اتارنے کے مترادف ہے۔ایس اے حمید نے کہا کہ در اصل اس نظریاتی بنیاد میں تحریک آزادی کی روح بسی ہے تحریک آزادی کی اس روح کا نام پاکستانیت ہے اور جب تک یہ تحریک پاکستانیت سے عبارت ہے اسے ختم کرنا یا اس کا استحصال کر نا خارج از امکان ہے پاکستان مقبوضہ کشمیر کے بغیر ادھورا ہے اگر پاکستان کشمیر کے بغیر خود کو مکمل تصور کرے گا تو تحریک آزادی کشمیر تاریخ کے قبرستان میں ہمیشہ کے لئے دفن ہو جائے گی۔