Home » Business » پنجاب:چودہ گھنٹے بجلی کی لوڈشیڈنگ

پنجاب:چودہ گھنٹے بجلی کی لوڈشیڈنگ

لاہور: ملک بھر میں بجلی کی طلب اور رسد میں فرق بڑھنے کے باعث غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ میں اضافہ ہو گیا ہے۔ لاہور میں پیپکو ذرائع نے بتایا ہے کہ ملک بھر میں بجلی کی طلب بارہ ہزار چار سو اکتالیس میگاواٹ کے مقابلے میں تین ہزار اکیس میگاواٹ کی قلت ہے۔ رات گیارہ بجے کے بعد منگلا اور تربیلا ڈیموں سے پانی کا اخراج انتہائی کم ہونے پر تمام گرڈ اسٹیشنوں کو غیر اعلانیہ طور پر بند کرنے کا سلسلہ بھی تیز کر دیا گیا ہے۔پنجاب کے شہری علاقوں میں آٹھ اور دیہات میں لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ چودہ گھنٹے تک پہنچ گیا ہے۔ حکام کے مطابق شیخوپورہ میں ایک سو پچاس میگاواٹ کے رینٹل پلانٹ کا انتظامیہ سے تین سالہ معاہدہ ختم ہونے پر سوئی ناردرن گیس کمپنی نے گیس کنکشن منقطع کر دیا ہے جبکہ ایک سو اڑتیس میگاواٹ کے دوسرے رینٹل پلانٹ سے معاہدہ جون میں ختم ہو جائے گا۔ نجی پاور کمپنیوں کے ذرائع نے بتایا ہے کہ لاہور کے قریب مریدکے میں دو سو تیرہ میگاواٹ کے سفائر اوربلوکی میں دو سو پچیس میگاواٹ کے بجلی گھروں نے آزمائشی پیداوار شروع کردی ہے،جو اگلے ہفتے پیپکو کو فروخت شروع کردیں گے۔سیالکوٹ، گوجرانوالہ، حافظ آباد، شیخوپورہ، سرگودھا، فیصل آباد، ٹوبہ ٹیک سنگھ، جڑانوالہ، اوکاڑہ، ساہیوال، ملتان، بہاولپور، رحیم یار خان اور راجن پور سمیت تمام چھوٹے بڑے شہروں میں گھنٹوں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے باعث عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔